Customs Intelligence Recover Whisky Bottle which were illegally cleared

کسٹمزانٹیلی جنس ، شامی سفارتخانے کے کنسائمنٹس سے اسمگل کی جانے والی شراب برآمد

0
255

کراچی(اسٹاف رپورٹر)ڈائریکٹوریٹ آف کسٹمزانٹیلی جنس اینڈانویسٹی گشن کراچی نے شامی سفارتخانے کے کنسائمنٹ کے ذریعے کی جانے والی شراب کی اسمگلنگ ناکام بنادی۔ذرائع کے مطابق اسلام آبادمیں قائم شام کے سفارت خانے کی جانب سے مختلف کھانے پینے کی اشیاءکے دوکنسائمنٹس مارچ2019میں درآمدکئے گئے تھے تاہم ڈائریکٹرکسٹمزانٹیلی جنس عرفان جاوید کو خفیہ اطلاع ملی تھی کہ سفارتخانوں کی جانب سے درآمدکئے جانے والے کنسائمنٹس میں بھاری مقدارمیں شراب اسمگل کی جاری ہے جس پرڈائریکٹرعرفان جاوید کی جانب سے ایڈیشنل ڈائریکٹرعلی زمان گردیزی کی سربراہی میں تشکیل دی جانے والی ٹیم میںشامل سپرنٹنڈنٹ محمدالیاس اوردیگرافسران نے متعلقہ ٹرمینل پر مارچ2019میں انڈونیشیا،شام ،الجریااورلبنان کی جانب سے درآمدکئے جانے والے کنسائمنٹس کی کلیئرنس روک کر تحقیقات کا آغازکردیاگیاتھا۔ذرائع نے بتایاکہ کسٹمزانٹیلی جنس کی جانب سے تحقیقات کی گئی جس میں شام کے سفارتخانے کی جانب سے درآمدہونے والے دونوںکنسائمنٹس سے لاتعلقی کا اظہارکیاگیاجبکہ دونوں کنسائمنٹس شامی سفارتخانے میں کام کرنے والے Radwan Loutfi اورMaha Al Aswadکے نام پر درآمدکئے گئے تھے اوردونوں کنسائمنٹس کی کلیئرنس کے لئے ایگزمشن سرٹیفکیٹ نمبر196اور178دیاگیاتھا۔ذرائع نے بتایاکہ شامی سفارتخانے کے دونوں کنسائمنٹس ایم سی سی اپریزمنٹ ویسٹ کلیئرکئے گئے جس میں کھانے پینے کی اشیاءظاہرکی گئیں تھیں لیکن کسٹمزانٹیلی جنس نے خفیہ اطلاع دونوں کنسائمنٹس کی کلیئرنس روک دی تھی۔تاہم اس سلسلے میں 3ستمبر 2019کو مزکورہ کنسائمنٹس کی جانچ پڑتال کی اجازت ملی تاہم کنسائمنٹس کی جانچ پڑتال کی گئی توکنسائمنٹس میں 2268مختلف برانڈکی شراب کی بوتلیں برآمدہوئیںجوغیرقانونی طورپر کلیئرکی جارہیںتھیں۔واضح رہے کہ کسٹمزانٹیلی جنس کی جانب سے مارچ2019میں انڈونیشیا،شام ،الجریااورلبنان کے سفارتخانوں کے کنسائمنٹس کی کلیئرنس شراب کی اسمگلنگ کے شبہ میںروک کردی گئی تھیں جبکہ 22مئی 2019کو انڈونیشین سفارتخانے کے کنسائمنٹ کی جانچ پڑتال کی دوران شراب کی 1080بوتلیں برآمدہوئیں تھیں جنھیں غیرقانونی طورپر کلیئرکیاجارہاتھا۔ذرائع نے بتایاکہ اس سلسلے میں کسٹمزانٹیلی جنس نے واقعہ کی ایک تفصیلی رپورٹ وزارت خارجہ کو ارسال کردی ہے اوررپورٹ کے ساتھ ساتھ وزارت خارجہ سے درخواست کی ہے کہ کسٹمزانٹیلی جنس کی جانب سے روکے گئے باقی ماندہ سفارتخانوں میں شامل لبنان اورالجریاکے کنسائمنٹس کی جلدازجلد مشترکہ جانچ پڑتال کی اجازت دی جائے تاکہ کنسائمنٹس جانچ پڑتال کی جاسکے۔

LEAVE A REPLY